naveed pitras From PK

زبور 30: ” اَے خُداوند! مَیں تیری تمجید کرونگا کیونکہ تُو نے مجھے سرفراز کیا ہے۔ اور میرے دُشمنوں کو مجھ پر خُوش ہونے نہ دِیا۔ اَے خُداوند میرے خُدا! مَیں نے تجھ سے فریاد کی اور تُو نے مجھے شفا بخشی۔ اَے خُداوند! تُو میری جان کو پاتال سے نکال لایا ہے۔ تُو نے مجھے زندہ رکھا ہے کہ گور میں نہ جاؤں۔ خُدا کی ستائش کرو اَے اُس کے مُقدسو! اور اُس کے قُدس کو یاد کر کے شُکرگزاری کرو۔ کیونکہ اُس کا قہر دم بھر کا ہے۔ اُس کا کرم عُمر بھر کا۔ رات کو شاید رونا پڑے پر صُبح کو خُوشی کی نوبت آتی ہے۔ مَیں نے اپنی اقبال مندی کے وقت یہ کہا تھا کہ مجھے کبھی جنبش نہ ہوگی۔ اَے خُداوند! تُو نے اپنے کرم سے میرے پہاڑ کو قائم رکھا تھا۔ جب تُو نے اپنا چہرہ چھپایا تو مَیں گھبرا اُٹھا۔ اَے خُداوند! مَیں نے تجھ سے فریاد کی۔ مَیں نے خُداوند سے مَنت کی۔ جب مَیں گور میں جاؤں تو میری مَوت سے کیا فائدہ؟ کیا خاک تیری ستائش کریگی؟ کیا وہ تیری سچائی کو بیان کریگی؟ سُن لے اَے خُداوند! اور مجھ پر رحم کر۔ اَے خُداوند! تُو میرا مددگار ہو۔ تُو نے میرے ماتم کو ناچ سے بدل دیا۔ تُو نے میرا ٹاٹ اُتار ڈالا اور مجھے خُوشی سے کمربستہ

naveed pitras From PK

اے خُداوند، ہم اپنی مشکلات میں تجھے یاد کرتے ہیں، کہ تو ہمیں قوت بخش اور ہمارے بھاری بوجھ کو اُٹھا، جب تک کہ ہم پھر سے تیری خاص شفقت میں امن اور محبت محسوس کریں۔ ہمارا خیال رکھ اور ہم پر رحم کر کہ جب تک ہم اپنی زندگی کی مشکلات کو سمجھنے کے لئے جدوجہد کر رہے ہیں۔ ہم پر نظر رکھ تا کہ ہم پھر سے روشن دلوں اور نئی روحانیت کے ساتھ چلیں۔ دُعا سب سے بڑی مہارت ہے جو خُدا نے ہمیں بخشی ہے۔ اگر آپ دُعا کریں گے اور کرتے رہیں گے اور زیادہ سے زیادہ دُعا کریں گے تو کوئی ایسی مشکل نہیں آئے گی جو آپ کو ہراساں کر سکے۔ آپ دُعا کے ذریعے اپنی اُمیدیں پالیں گے۔ اگر آپ ابھی کسی مشکل میں ہیں، اگر آپ کا حوصلہ ختم ہو چکا ہے یا آپ کسی چیز کو لے کر نہ اُمید ہو گئے ہیں تو اِس کے بارے میں بات کرنا چھوڑ دیں، اِس کے بارے میں سوچنا اور ناراض ہونا چھوڑ دیں، اِس کے بارے میں شکایت کرنا چھوڑ دیں، اِدھر اُدھر جانا اور اِس کے بارے میں مشورے لینا چھوڑ دیں۔ صرف دُعا کریں۔ یہ بہت آسان ہے۔ اپنی مشکلات کو لیں، وہ جو بھی ہیں اور اِس کے بارے میں دُعا شروع کریں جب تک کہ آپ کے دماغ میں ایک روشنی پیدا ہو اور آپ پھر سے